کراچی پاکستان کے مختلف حصوں میں 4.1 شدت کے زلزلے کے جھٹکے

بدھ کی رات گئے کراچی کے مختلف علاقوں میں 4.1 شدت کا زلزلہ آیا۔

گلشن اقبال، گلستان جوہر، گلشن حدید، ملیر اور سکیم 33 میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔

کے مطابق نیشنل سیسمک مانیٹرنگ سینٹرزلزلے کا مرکز ڈی ایچ اے کراچی سے 15 کلومیٹر شمال میں تھا اور اس کی گہرائی 15 کلومیٹر تھی۔ اس نے کہا کہ زلزلہ 17:16:04 UTC پر آیا اور اس کا طول بلد 67.29 مشرقی اور عرض بلد 25.17 شمال تھا۔

اسپورٹس پریزینٹر سویرا پاشا نے کہا، “کراچی میں تقریباً سب کچھ ہل گیا!”

صحافی عثمان حنیف نے کہا کہ انہوں نے بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے ہیں۔ انہوں نے کہا، “کراچی کی آبادی بہت زیادہ ہے اور بہت سے علاقوں میں گھر معیاری مٹیریل سے نہیں بنے ہیں۔”

اکتوبر میں بلوچستان کے کچھ حصوں میں 5.9 شدت کے زلزلے کے بعد کم از کم 15 افراد ہلاک اور 150 سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔

سب سے زیادہ متاثرہ علاقہ ہرنائی کا دور افتادہ پہاڑی ضلع تھا جہاں مٹی کے تودے گرنے سے کچھ سڑکیں بند ہوگئیں جس سے بچاؤ کی کوششوں میں رکاوٹ پیدا ہوئی۔ زلزلہ کوئٹہ سے 95 کلومیٹر شمال مشرق میں ضلع ہرنائی میں سب سے زیادہ متاثر ہوا، جہاں جانی نقصان ہوا اور سینکڑوں کچے مکانات گر گئے یا نقصان پہنچا، جس سے ہزاروں بے گھر ہو گئے۔

زلزلہ تقریباً 20 کلومیٹر کی اتھلی گہرائی میں آیا، اس کا مرکز ہرنائی شہر کے قریب تھا اور اس کے جھٹکے چمن، پشین، زیارت، مستنگ، سبی، سنجیو، قلعہ سیف اللہ، مسلم باغ، ژوب اور دکی میں بھی محسوس کیے گئے۔