او آئی سی اجلاس کی سیکیورٹی کے پیش نظر دارالحکومت میں پیر تک تعطیل ہوگی – پاکستان

اسلام آباد: اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے اجلاس کی سیکیورٹی کے پیش نظر دارالحکومت کی انتظامیہ نے 18 اور 20 دسمبر کو اسلام آباد میں مقامی تعطیل کا اعلان کر دیا۔ ذرائع نے ڈان کو بتایا۔

ذرائع نے بتایا کہ اس کے علاوہ انتظامیہ نے موبائل فون سروس معطل کرنے کے خلاف بھی فیصلہ کیا ہے۔

اس کے علاوہ راولپنڈی شہر کے اندر تمام سرکاری اور نجی تعلیمی ادارے پیر (20 دسمبر) کو بند رہیں گے۔ تاہم اس چھٹی کا نوٹیفکیشن کنٹونمنٹ ایریا میں واقع اداروں پر لاگو نہیں ہوگا۔

او آئی سی کے وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کے نمائندوں کے لیے سیکیورٹی انتظامات کے حوالے سے اجلاس میں شرکت کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے تصدیق کی کہ دارالحکومت کی انتظامیہ نے 18 اور 20 دسمبر کو دارالحکومت میں مقامی تعطیلات کا اعلان کیا ہے۔

موبائل فون سروس بند نہ کریں۔

انہوں نے کہا کہ وزارت کے تمام متعلقہ محکموں بشمول پولیس، کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) اور مسلح افواج سے مشاورت کے بعد فیصلہ کیا گیا کہ دارالحکومت میں موبائل فون سروس معطل نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ غیر ملکی میڈیا میں خدشات کے اظہار کے بعد کیا گیا کیونکہ موبائل فون سروس کی معطلی سے نمائندوں سے رابطہ کرنا مشکل ہو جائے گا۔

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ تمام محکمے ایک دوسرے کے ساتھ ہم آہنگی کر رہے ہیں اور آنے والے مہمانوں کو بہترین ممکنہ سکیورٹی خدمات فراہم کی جائیں گی۔

وزیراعظم کانفرنس کے شرکاء سے خطاب بھی کریں گے۔

مسٹر احمد نے کانفرنس کے سیکورٹی انتظامات کے بارے میں بریفنگ میں شرکت کے لیے سیف سٹی اتھارٹی کا بھی دورہ کیا۔

کیپٹل انتظامیہ کے حکام کا کہنا ہے کہ میٹرو بس کا ایک حصہ شہید ملت سیکرٹریٹ سے پاک سیکرٹریٹ تک 17 سے 20 دسمبر تک تمام ہائیکنگ ٹریلز کے علاوہ بند رہے گا۔ یہ بات ڈپٹی کمشنر محمد حمزہ شفقت کے دفتر سے جاری کردہ ایک نوٹیفکیشن میں بتائی گئی ہے۔

اسی طرح کے اقدام میں، کابینہ ڈویژن نے پیر (20 دسمبر) کو او آئی سی کنونشن کی وجہ سے اسلام آباد میں مقامی تعطیل کا اعلان کیا۔ ڈویژن کی طرف سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ اسلام آباد میں واقع وفاقی حکومت کی تمام وفاقی وزارتیں/محکمے اور ان سے منسلک محکمے اور دیگر ادارے/دفاتر بھی پیر کو بند رہیں گے۔

اس کے ساتھ ہی کیپٹل پولیس کے ایگزیکٹو اور منسٹریل اسٹاف کے تمام افسران کی چھٹیاں منسوخ کر کے انہیں اپنے فرائض سرانجام دینے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اس حوالے سے انسپکٹر جنرل پولیس (آئی جی پی) اسلام آباد کے دفتر سے ایک حکم نامہ جاری کیا گیا۔

حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ کسی افسر یا افسر کو 20 دسمبر 2021 تک چھٹی کی اجازت نہیں دی جائے گی سوائے انتہائی ایمرجنسی کے۔

پولیس نے بتایا کہ سیکیورٹی پلان کے مطابق، او آئی سی کے رکن ممالک کے دورے پر آنے والے نمائندوں کی حفاظت کے لیے کیپٹل پولیس، پاکستان آرمی، رینجرز اور فرنٹیئر کور (ایف سی) کے تقریباً 5,100 اہلکاروں کو ریڈ زون اور اس کے اطراف میں تعینات کیا گیا ہے۔ ہوائی اڈے سے ریڈ زون تک کے راستے پر مندوبین کو بھی سیکیورٹی فراہم کریں۔

ڈان، دسمبر 18، 2021 میں شائع ہوا۔