کے پی کے ڈی آئی خان میں اے این پی کے میئر امیدوار کو بلدیاتی انتخابات سے قبل گولی مار کر قتل کر دیا گیا – پاکستان

ڈیرہ اسماعیل خان شہر کے میئر کے لیے انتخاب لڑنے والے عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار کو ہفتے کے روز گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا، اس سے ایک روز قبل خیبر پختونخوا کے کچھ حصوں میں بلدیاتی نشستوں کے لیے پولنگ ہونے والی تھی۔

پولیس کے مطابق تھانہ ماڈل ٹاؤن کی حدود عمر خطاب شیرانی کے گھر کے باہر نامعلوم حملہ آوروں نے فائرنگ کی اور فرار ہوگئے۔ شیرنی موقع پر ہی دم توڑ گئی۔

ان تفصیلات کی تصدیق کرتے ہوئے ڈیرہ اسماعیل خان کے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نجم الحسنین نے میڈیا کو بتایا کہ پولیس نے معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور شیرانی کے قاتلوں کی گرفتاری کے لیے سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ فی الحال اس بارے میں تبصرہ کرنا قبل از وقت ہوگا کہ قتل کے پیچھے کون ہے۔

واقعے کے فوراً بعد شیرانی کے اہل خانہ اور اے این پی کے کارکنان بڑی تعداد میں ان کی رہائش گاہ پہنچ گئے اور ان کے قتل کے خلاف احتجاج کیا۔

بعد ازاں انہوں نے لاش رکھ کر دھرنا دیا اور ساؤتھ سرکلر روڈ کو گھنٹوں بلاک رکھا۔

مقامی انتظامیہ سے مذاکرات کے بعد ہڑتال ختم کر دی گئی۔

شیرانی کی آخری رسومات ایک کالج کی گراؤنڈ میں ادا کی گئیں اور ان میں امور کشمیر کے وزیر علی امین گنڈا پور، اے این پی کے کارکنوں اور دیگر نے شرکت کی۔

انہیں ان کے آبائی علاقے شیرانی میں سپرد خاک کیا گیا۔

اس واقعے کے بعد الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈیرہ اسماعیل خان میں شہر کے میئر کا انتخاب ملتوی کر دیا۔