کرکٹ آسٹریلیا کے سربراہ نے یقین دہانی کرائی کہ کوویڈ 19 کے خدشات کے باوجود پاکستان کا دورہ آگے بڑھے گا۔

کرکٹ آسٹریلیا (سی اے) کے چیف ایگزیکٹو نے اپنی ٹیم کے اگلے سال پاکستان کے دورے کے بارے میں غیر یقینی صورتحال کو دور کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوویڈ 19 کے خدشات کے باوجود دو طرفہ سیریز منصوبہ بندی کے مطابق آگے بڑھے گی۔

آسٹریلیا 3 مارچ سے شروع ہونے والی ایک ماہ کی سیریز میں تین ٹیسٹ، تین ایک روزہ بین الاقوامی (ODI) اور ایک T20 International (T20I) میچ کھیلے گا۔

ٹیسٹ میچز 3 سے 25 مارچ تک کراچی، راولپنڈی اور لاہور میں کھیلے جائیں گے جب کہ وائٹ بال کے چاروں میچز 29 مارچ سے 5 اپریل تک لاہور میں کھیلے جائیں گے۔

سی اے کے سربراہ نک ہاکلے نے کہا، “ہم پاکستان کرکٹ بورڈ اور تمام حکام کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں۔ یہ واقعی ایک پیچیدہ کوشش ہے، ہم اس دورے کے لیے بہت پرعزم ہیں۔ جب تک ایسا کرنا محفوظ ہے، ہمارا دورہ ہونے کا ارادہ ہے۔” یہ بات اتوار کو میلبورن کرکٹ گراؤنڈ میں صحافیوں کو بتائی گلف نیوز,

آسٹریلیا نے 1998 کے بعد سے پاکستان کا دورہ نہیں کیا اور دونوں ممالک صرف آسٹریلیا، متحدہ عرب امارات اور انگلینڈ میں ملے ہیں۔

پی سی بی کے چیئرمین رمیز راجہ نے اس ہفتے کے شروع میں اس اعتماد کا اظہار کیا تھا کہ آسٹریلیا، انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے ساتھ اگلے سال شیڈول کے مطابق پاکستان کا دورہ کرے گا۔

پی سی بی کے آنے والے چیف آپریٹنگ آفیسر فیصل حسنین کے ساتھ بیٹھے ہوئے رمیز نے کہا، “ہم نے دنیا کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے اجلاسوں میں اپنی موجودگی سے آگاہ کر دیا ہے۔”

انگلینڈ، جنہوں نے اکتوبر میں اپنی مرد اور خواتین کی ٹیمیں بھیجنی تھیں – مردوں کی ٹیم کے ساتھ دو ٹوئنٹی 20 کھیلنے کی وجہ سے – پھر پاکستان کے دورے کے دوران اپنے کھلاڑیوں کی دماغی صحت کے بارے میں خدشات کی وجہ سے اپنی ٹیموں کو واپس لے لیا۔

اس وقت ایسا لگ رہا تھا کہ اگلے سال مارچ میں آسٹریلیا کا شیڈول دورہ آگے نہیں بڑھے گا۔

یہ بھی پڑھیں: رمیز کو یقین ہے کہ انگلینڈ، آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ ٹاپ کھلاڑیوں کے ساتھ پاکستان کا دورہ کریں گے۔

یہ سب اس وقت شروع ہوا جب نیوزی لینڈ نے سیکیورٹی الرٹ کا حوالہ دیتے ہوئے ستمبر میں اچانک اپنا دورہ پاکستان ترک کر دیا، جو پاکستان کی باقاعدہ بین الاقوامی کرکٹ کے انعقاد کی امیدوں پر ایک بڑا دھچکا ہے۔

اس دورے کا آغاز 17 ستمبر 2021 کو راولپنڈی میں پہلے تین ون ڈے میچوں سے ہونا تھا لیکن نیوزی لینڈ کی ٹیم نے اسٹیڈیم کا سفر نہیں کیا۔

نیوزی لینڈ کی کرکٹ ٹیم 18 سال میں پہلی بار 11 ستمبر کو تین ون ڈے اور پانچ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھیلنے کے لیے پاکستان پہنچی۔

نیوزی لینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز راولپنڈی اسٹیڈیم میں کھیلی جانی تھی جس کے میچز 17، 19 اور 21 ستمبر کو شیڈول تھے جب کہ قذافی اسٹیڈیم میں 25 ستمبر سے 3 اکتوبر تک پانچ ٹی ٹوئنٹی میچز کی میزبانی ہونی تھی۔

,